ہم اپنی سنائیں گے ان کو سنتے وہ نہیں احوال تو کیا : ایک فی البدیہہ طرحی غزل : برقی اعظمی

Leave a Reply