دلدار ہی رہا نہ دلآزار ہی رہا ۔ نذر داغ دہلوی : احمد علی برقی اعظمی

Leave a Reply